0 0
Read Time:2 Minute, 9 Second

آزادی ڈیسک
پاکستانی کارساز کمپنی لکی موٹرز کی جانب سے ٹویوٹا فارچیونر کے مقابلے میں کیا سورنٹو ماڈل متعارف کروانٕے کا اعلان،
عارف حبیب لمیٹڈ کی جانب سے جاری کردہ تفصیلات کیمطابق گاڑی کی تقریب رونماٸی 19 فروری کو ہوگی جبکہ یہی کمپنی رواں سال جون تک کاریٹو کے نام سے بھی ایک نٸی گاڑی متعارف کروانے کا ارادہ رکھتی ہے
2016 میں پاکستان نے مقامی کارساز اداروں کے مابین مسابقتی ماحول کوبہتر بنانے اور صارفین کو زیادہ بہتر انداز میں سہولتیں فراہم کرنے کےلیے آٹو موباٸل پالیسی کا اعلان کیا تھا
سوزوکی گاڑیوں کی قیمتوں میں 35ہزار سے 11لاکھ روپے تک اضافہ
تجزیہ کار فواد بشیر کے مطابق نٸے ماڈلز میں حفاظتی اقدامات اور ایندھن کے حوالے سے جدید ٹیکنالوجی کے استعمال کے نتیجے میں گاڑیوں کے معیار اور کارکردگی میں زیادہ بہتری آۓ گی اور مارکیٹ میں نٸی کمپنیوں کے آنے سے پرانے اداروں کو بھی اپنے معیار کو بہتر بنانے کیلٸے اقدامات اٹھانے پر مجبور کر دیا ہے
یہی وجہ ہے کہ سوزوکی کمپنی نے کٸی نٸے اور جدید ٹیکنالوجی سے آراستہ ماڈل متعارف کرواٸے جن میں سوزوکی ویگن آر,کلٹس آلٹو شامل ہیں ۔دوسری جانب انڈس موٹرز نے کرولا ماڈل کو بہتر بناتے ہوٸے یاریز جبکہ ہنڈا اٹلس کی جانب سے بھی رواں سال سٹی کے نٸے اور بہتر ماڈل کے بعد دسویں جنریشن کی سوک سامنے لاٸے جانے کا امکان ہے ۔

انہوں نے کہا پاکستان میں کارسازی کی صنعت میں نمایاں بہتری دیکھنے میں آ رہی ہے اور سال 2021 میں دو لاکھ کاریں فروخت ہونے کا امکان ہے۔
تجزیہ کار ارسلان حنیف کے مطابق مارکیٹ کی موجودہ صورتحال آٹو موباٸل انڈسٹری کیلیے انتہاٸی سازگار ہے۔جبکہ صارفین کا ردعمل بھی نٸے اداروں کے حوالے سے حوصلہ افزا دکھاٸی دے رہا ہے جنہیں اپنی رقم کے بدلے میں متعدد انتخاب دستیاب ہو رہے ہیں
انہوں نے بتایا کہ سال 2018 کے دوران پاکستان نے 78 ہزار گاڑیاں درآمد کیں لیکن آٹو موباٸل پالیسی متعارف کرواٸے جانے کے بعد سال2020 کے دوران درآمد شدہ گاڑیوں کی تعداد 10 ہزار تک آگٸی ہے۔جبکہ مقامی سطح پر نٸے اداروں کے داخلے سے درآمدات پر انحصار مزید کم ہوگا اور پرانے اداروں کی شرح فروخت برقرار رہے گی
لیکن اپنے صارفین کو مطمٸن رکھنے کیلٸے ان اداروں کو اپنی مصنوعات میں سہولیات کا معیار بہتر سے بہتر لانا ہو گا ۔
کیا کی جانب سے متعارف کرواٸی جانے والی سات نشستوں کی حامل نٸی گاڑی تین ماڈلز اور سات مختلف رنگوں میں دستیاب ہو گی
جس میں جدید سہولتیں دستیاب ہیں جبکہ اس کی قیمت کا اندازہ ستر سے85 لاکھ روپے کے درمیان لگایا جا رہا ہے۔

Happy
Happy
0 %
Sad
Sad
0 %
Excited
Excited
0 %
Sleepy
Sleepy
0 %
Angry
Angry
0 %
Surprise
Surprise
0 %

Average Rating

5 Star
0%
4 Star
0%
3 Star
0%
2 Star
0%
1 Star
0%

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Translate »