آزادی ڈیسک
اٹلی کی وزارت خارجہ کی طرف سے جاری شدہ بیان کے مطابق کانگو میں تعینات 43 سالہ اطالوی سفارت کار لوکا اتاناسیو , پولیس آفسیر اور اپنے ڈرائیور کے ہمراہ مشرقی علاقے میں قتل کر دئیے گئے
چین ،بھارت متنازعہ خطے سے فوجوں‌کے انخلا پر متفق
تفصیلات کے مطابق مقتول سفارت کار اقوام متحدہ کے ایک قافلے کے ہمراہ سفر کر رہے تھے اور اٹلی کی وزارت خارجہ نے واقعہ پہ گہرے رنج کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ اس ظالمانہ واقعے کے محرکات تاحال نامعلوم ہیں البتہ اس واقعے کی وجوہات جاننے کے لئیے کوئی کسر نہیں اٹھا رکھی جائے گی
یہ واقعہ اس وقت پیش آیا جب مقتول سفارت کار اقوام متحدہ کے قافلے کے ہمراہ جمہوریہ کانگو کے علاقے گوما سے مشرقی دارلحکومت کی جانب ورلڈ فوڈ پروگرام کے ایک سکول پراجیکٹ میں شرکت کے لئیے جا رہے تھے
لوکا اتاناسیو اس سے قبل سوئزرلینڈ اور اور مراکش میں بھی بطور سفارت کار خدمات انجام دیتے رہے ہیں اور انکے قتل نے اٹلی کو ایک جہاندیدہ سفارت کار سے محروم کر دیا ہے

Leave a Reply

Your email address will not be published.

Translate »