0 0
Read Time:1 Minute, 56 Second

آزادی ڈیسک
پنجاب اسمبلی کے اپوزیشن لیڈ ر اور پاکستان مسلم لیگ ن کے رہنما حمزہ شہباز شریف منی لانڈرنگ کیس میں‌20 ماہ بعد جیل سے ضمانت پر رہا ہو گئے ضمانت پر رہائی کے بعد اپنے پہلے خطاب میں کہا ہے کہ جیل کی سلاخیں مسلم لیگ (ن) کے رہنماؤں کے لیے کوئی نئی بات نہیں ہے اور آج پوری قوم نے احتساب کے تماشے کا منطقی انجام دیکھ لیا۔

پاکستان کی سیاست کا مشاہد،اللہ کے حضور پیش

نواز شریف کو چور کہنے والے خود چوروں کے سردار نکلے،مریم صفدر
لاہور میں کارکنوں سے خطاب کے دوران انہوں نے مسلم لیگ (ن) کے قائد نواز شریف کے حوالے سے کہا کہ کبھی کسی نے ایسا لیڈر دیکھا جو اپنی بیمار بیوی کو چھوڑ کر اپنی بیٹی کا ہاتھ تھام کر جیل چلا گیا اور وزیر اعظم عمران خان نیازی کے انتقام کا سامنا کیا۔

انہوں نے کہا کہ موجودہ حکومت کو تقریباً 3 سال مکمل ہونے کے آئے ہیں، یہ ایک جعلی حکومت ہے۔
حمزہ شہباز نے کہا کہ 3 برس بدترین سیاسی انتقام کے باوجود حکومت نواز شریف اور شریف خاندان کے خلاف ایک پائی کی کرپشن ثابت نہیں کرسکی۔
انہوں نے کہا کہ حکومتی نمائندے روز ٹی وی شوز میں بیٹھ کر پیپر لہرا کر کہتے ہیں کہ ثبوت مل گئے، دراصل وہ جھوٹ بولتے ہیں۔ان کا کہنا تھا کہ جب اپوزیشن کے خلاف کوئی ثبوت نہیں ملا تو اس کا غصہ عوام پر نکلا اور گزشتہ 6 ہفتوں سے دال، چینی، آٹا و دیگر اشیا کی قیمتوں میں بتدریج اضافہ ہی ہورہا ہے۔
حمزہ شہباز نے کہا کہ ایک طرف مسلم لیگ (ن) کی قیادت پر مفروضوں پر مبنی الزامات لگاتے ہیں اور دوسری طرف دن کی روشی میں اٹا اور چینی چور پکڑے جاتے ہیں۔انہوں نے کہا کہ جتنی قربانی دینی پڑی دیں گے لیکن اب تمہارا (وزیر اعظم عمرا خان ) کا یو م حساب شروع ہوگیا۔ان کا کہنا تھا کہ ضمنی انتخابات میں نوشہرہ کے لوگوں نے حکومت کا دہرا معیار مسترد کردیا جو اس بات کی عکاسی ہے کہ نواز شریف نہیں بلکہ عمران خان چور ہے۔
حمزہ شہباز نے مسلم لیگ (ن) کے دور اقتدار میں مکمل ہونے والے منصوبہ کا تذکرہ کرتے ہوئے کہا کہ دل پر ہاتھ رکھ کر بتاؤ کہ موجودہ حکومت نے کوئی ایک منصوبہ بنایا ہو۔

Happy
Happy
0 %
Sad
Sad
0 %
Excited
Excited
0 %
Sleepy
Sleepy
0 %
Angry
Angry
0 %
Surprise
Surprise
0 %
Translate »