0 0
Read Time:1 Minute, 43 Second

آزادی نیوز
آپریشن کے دوران کمسن بچے کی موت پر حکومت حرکت میں آ گٸی ۔نجی ہسپتال کا آپریشن تھیٹر اور آٸی سی یو وارڈ کو سیل کر دیا گیا
گذشتہ روز ضلع مردان کے علاقے کٹلنگ میں واقع رشید میڈیکل اینڈ سرجیکل نامی ایک نجی ہسپتال میں آپریشن کے دوران چھ سالہ بچے کی موت کے بعد شہریوں نے اس واقعہ کی ویڈیو سوشل میڈیا پر ڈال دی تھی
جس کا سیکرٹری صحت سید امتیاز حسین شاہ اور چیف ایگزیٹکو ہیلتھ کیٸر کمیشن خیبرپختونخواہ ڈاکٹر مقصود علی خان نے فوری طور پر نوٹس لیتے ہوٸے واقعہ کی انکواٸری کا حکم دیا
جس پر اسسٹنٹ کمشنر کٹلنگ سب ڈویژن کامران خان اور ہیلتھ کمیشن کے فرحان ودود نے مذکورہ ہسپتال کا دورہ کیا
ہیلتھ کیٸر کمیشن کی جانب سے جاری کردہ ابتداٸی تفصیلات کیمطابق متاثرہ بچے کا کامیاب آپریشن ہوا جسے صحت انصاف کارڈ کے تحت ڈاکٹر طاہر اور ان کے معاونین نے سرانجام دیا
تاہم آپریشن کے بعد بچے کی حالت بگڑنا شروع ہو گٸی
اس وقت ہسپتال میں آٸی سی وارڈ آلات کی غیر موجودگی کے باعث غیر فعال تھا ۔اور متاثرہ بچے کو تشویشناک حالت میں ایک قریبی نجی ہسپتال میں منتقل کیا گیا لیکن وہاں پہنچنے سے قبل ہی وہ دم توڑ چکا تھا ۔
ہیلتھ کیٸر کمیشن نے قواعدکی خلاف ورزی پر ہسپتال کا آپریشن تھیٹر اور آٸی سی یو وارڈ سیل کردیا ہے جبکہ فوت ہونے والے بچے کے والدین کی مدعیت میں ہسپتال انتظامیہ کیخلاف ایف آٸی آر بھی درج کر لی گٸی ہے
واضح رہے کہ صحت کارڈ کے تحت رجسٹرڈ کی جانے والی نجی شعبے کی ہسپتالوں اور طبی مراکز کیخلاف شکایات میں اضافہ ہو رہا ہے کیونکہ ان میں بعض ہسپتال بنیادی شراٸط و اہلیت پر بھی پورا نہیں اترتے
لیکن اس کے باوجود بھی ایسے اداروں کو صحت کارڈ علاج کیلیے رجسٹر کیا جانا معاملات کی شفافیت پر سوال اٹھا رہے ہیں

کیونکہ بعض نجی ہسپتال محض اپنے بل بنانے کیلیے مریضوں کی غیر ضروری سرجریز کروا دیتے ہیں
جبکہ یہ خیبر پختونخواہ ہیلتھ کیٸر کمیشن کی کارکردگی و اہلیت پر سوالیہ نشان ہے

Happy
Happy
0 %
Sad
Sad
0 %
Excited
Excited
0 %
Sleepy
Sleepy
0 %
Angry
Angry
0 %
Surprise
Surprise
0 %
Translate »