0 0
Read Time:5 Minute, 16 Second

آزادی ڈیسک

تحریک لبیک کے سربراہ سعد رضوی اور دیگر رہنمائوں کےخلاف لاہور پولیس نے انسداد دہشتگردی ایکٹ اور امن عامہ ایکٹ کے تحت مقدمات درج کرلئے ہیں

لاہور شاہدرہ ٹائون تھانہ میں پولیس کی مدعیت میں درج ہونے والے اس مقدمہ میں سعدرضوی ،پیر سید ظہیرالحسن شاہ ،مہرمحمد قاسم ،قاضی محمود احمد قادری ،پیر سید عنایت علی شاہ ،محمد اعجاز ،مولانا غلام غوث بغدادی ،مولانا غلام عباس فیضی سمیت دیگر کو نامزد کیا گیا ہے

مقدمہ تعزیرات پاکستان کی دفعات برائے قتل ،اغواء ،ایم پی او اور انسداد دہشت گردی کی دفعات کے تحت درج کیا گیا

مقدمہ میں کہا گیا کہ ماخوذ رہنمائوں اور کارکنوں نے مساجد میں لائوڈسپیکر اور سوشل میڈیا کے کے عوام کو پرتشدد احتجاج اور نقص امن پر اکسایا

تحریک لبیک کے قائد سعدرضوی کی گرفتاری پر ملک بھر میں احتجاج جاری

ٹوئٹرپر بھارت نوازی کا الزام،کشمیریوں کی آواز متعدد اکائونٹس معطل

واضح رہے تحریک لبیک پاکستان کے قائد سعد رضوی کی گرفتاری کے خلاف کارکنوں کی جانب سے ملک بھر میں احتجاج کا سلسلہ دوسرے روز بھی جاری ہے ،مختلف مقامات پر جھڑپوں میں اب تک دو افراد کے مارے جانے جبکہ درجنوں زخمی ہونے کی اطلاعات موصول ہورہی ہیں ،جن میں پولیس اہلکار بھی شامل ہیں

میڈیا رپورٹس کے مطابر کراچی ،لاہور ،اسلام آباد سمیت دیگر چھوٹے شہروں میں بھی مختلف مقامات پر مظاہرین نے

لاہور پولیس کی مدعیت میں درج ہونے والے مقدمہ کا عکس

لاہور کی مرکزی شاہراہیں اور راستے بدستور بند ہیں جبکہ کراچی اور اسلام آباد میں ٹریفک معمول سے کم ہے۔ لاہور میں پولیس، رینجرز اور ڈولفن فورس مستقل گشت کررہی ہیں جس کی وجہ سے شہر کے اندر صورتحال قابو میں ہے لیکن شہر سے باہر نواحی علاقوں میں تحریک لبیک کے کارکنان نے دھرنا دیا ہوا ہے۔

موٹر وے پولیس نے شہریوں کو تلقین کی ہے کہ وہ غیرضروری سفر سے گریز کریں جبکہ ایم-1 اور ایم-2 موٹر وے ہر طرح کے ٹریفک کے لیے بند ہے۔

تحریر جاری ہے‎

ایک بیان میں تحریک لبیک پاکستان نے احتجاجی دھرنے ختم کرنے کی تردید کرتے ہوئے کہا کہ دھرنے ختم کرنے کی خبروں میں کوئی صداقت نہیں، فرانس کا سفیر ملک بدر ہونے تک دھرنے جاری رہیں گے۔

ٹی ایل پی ترجمان طیب رضوی کا کہنا تھا کہ جب تک علامہ سعد حسین رضوی خود حکم نہ دیں گے ہمارے کارکنان دھرنوں پر موجود رہیں گے۔

انہوں نے واضح کیا کہ جن مقامات سے انتظامیہ نے دھرنا ختم کرایا ہے وہاں کارکنان احتجاج کے لیے دوبارہ پہنچیں گے

ملک کے مختلف شہروں میں صورتحال

کراچی پولیس کے جاری کردہ بیان کے مطابق پولیس ٹریفک کی روانی برقرار رکھنے کے لیے حب ریور روڈ ٹی ایل پی مظاہرین سے کلیئر کروانے کی کوشش کی اس دوران مظاہرین نے پولیس پر پتھر برسائے۔

چنانچہ پولیس کی جانب سے شیلنگ کا سلسلہ جاری ہے اور صورتحال قابو کرنے کی کوشش کی جارہی ہے، اس دوران کسی کے زخمی ہونے کی اطلاع نہیں ملی۔

ملک کے مختلف حصوں میں کئی اہم سڑکیں اور شاہراہیں احتجاج کے باعث بند ہونے کی وجہ سے شہریوں کو سخت مشکلات کا سامنا ہے جبکہ کچھ مقامات پر پولیس اور ٹی ایل پی کارکنان کی جھڑپیں بھی ہوئی جس کے نتیجے میں متعدد افراد کے زخمی ہونے کی اطلاعات ہیں۔

ملتان میں بہاولپور بائی پاس پر مظاہرین کا احتجاجی دھرنا جاری ہے اس دوران مظاہرین کی جانب سے پولیس اہلکاروں پر پتھراؤ کیا گیا جس کے نتیجے میں 4پولیس اہلکار اور ٹی ایل پی کا ایک کارکن زخمی ہوئے۔

زخمی پولیس اہلکاروں کو نشتر اسپتال منتقل کر دیا گیا جن میں ڈی ایس پی کینٹ جام سلیم بھی شامل ہیں۔

گوجرانوالہ میں ٹی ایل پی مظاہرین نے چندا قلعہ چوک میں احتجاجی دھرنا دے رکھا ہے اس دوران ان کے وقفے وقفے سے پولیس کے ساتھ جھڑپیں بھی ہوتی رہیں۔

گجرات کے جی ٹی ایس چوک پر دھرنا دینے والے تحریک لبیک کے کارکنوں کو گرفتار کیا گیا اس دوران وہاں لگے شامیانوں کو آگ لگادی گئی۔

پولیس اور رینجرز کی جانب سے ٹی ایل پی کارکنوں پر آنسو گیس کا استعمال کیا گیا جبکہ کارکنان کی جانب سے پتھر برسائے گئے۔ پولیس کی جانب سے پھینکی گئی آنسو گیس سے راہگیر متاثر ہوئے اور تشدد سے کئی کارکنان بھی زخمی ہوئے۔

ملک بھر کی اہم شاہراہوں کی صورتحال

نیشنل ہائی وے اتھارٹی (این ایچ اے) کے بیان کے مطابق ایم-ون، ایم-ٹو، ایم-تھری، ایم-فور، ایم-فائیو، ایم-نائن، آئی ایم ڈی سی ڈبلیو اور ای-35 سمیت تمام موٹرویز ہر قسم کی ٹریفک کے لیے کھلی ہیں۔

تاہم ٹیکسلا بائی پاس، گجر خان سٹی، روات سٹی، دینا سٹی، کینال برج، لالہ موسیٰ، چاند دا قلعہ، مریدکے، پی این ای روڈ، مولن وال، مولن وال بائی پاسم رینالہ خرد، لاہور موڑ، روشن آباد اور لاڑکانہ بائی پاس کے مقامات پر سڑکیں احتجاج کے باعث بند ہیں۔

اسلام آباد

اسلام آباد پولیس کے جاری کردہ بیان کے مطابق شہر میں فیض آباد کے مقام پر تمام اطراف سے سڑکیں بند ہیں جبکہ 5 مقامات بشمول ڈھوکری چوک، راول ڈیم چوک، باراکہو روڈ، روات ٹی کراس اور ترنول کے مقامات پر احتجاجی دھرنا جاری ہے۔

وفاقی دارالحکومت کا علاقہ ٹھال چوک، بھارہ کہو دونوں اطراف سے مکمل طور پر بند ہے اور ٹی ایل پی کے100 سے ڈیڑھ سو کارکنان مری سے اسلام آباد آنے والی روڈ پر دھرنا دیے بیٹھے ہیں۔

راستوں کی اپڈیٹ فراہم کرتے ہوئے اسلام آباد ٹریفک پولیس نے بتایا کہ راول ڈیم روڈ، ترامڑی روڈ، فیصل ایونیو، ایکسپریس روڈ، مارگلہ روڈ ٹریفک کے لیے کھلے ہیں۔

ان کے علاوہ جناح ایونیو، سری نگر ہائی وے،7، 9، 10 اور 11 ایونیو، اتاترک ایونیو اور شاہراہِ دستور ہر قسم کی ٹریفک کے لیے کھلی ہے۔

علاوہ ازیں نیشنل ہائی ویز اینڈ موٹروے پولیس ایف ایم 95 ریڈیو سے ہر 30 منٹ بعد تازہ ترین صورتحال نشر کی جارہی ہیں۔

لاہور

دوسری جانب سٹی ٹریفک پولیس لاہور نے شہریوں سے اپیل کی ہے کہ شہر کے مختلف مقامات پر احتجاج جاری ہے جس کے باعث غیر ضروری سفر سے گریز کریں۔

لاہور پولیس کے مطابق شہر میں امامیہ کالونی پھاٹک کالا کھٹائی روڈ، نیو شاد باغ چوک، شاہدرہ موڑ براستہ بیگم کوٹ چوک، کرول گھاٹی رنگ روڈ، شاہ کم چوک، یتیم خانہ چوک اور اسکیم موڑ، خیابان چوک رائیونڈ روڈ، مند پلی رائیونڈ کے مقام پر سڑکیں احتجاج کے باعث بند ہیں۔

 

Happy
Happy
0 %
Sad
Sad
0 %
Excited
Excited
0 %
Sleepy
Sleepy
0 %
Angry
Angry
0 %
Surprise
Surprise
0 %
Translate »