اسٹاف رپورٹ


وزیر اعظم عمران خان کی جانب سے وزارت عظمیٰ‌آزادکشمیر کیلئے نامزد امیدوار عبدالقیوم خان نیازی 33 ووٹ‌لیکر آزاد کشمیر کے تیرہویں وزیر اعظم منتخب ہوگئے .ان کے مدمقابل پاکستان پیپلز پارٹی آزادجموں‌و کشمیر کے سربراہ چوہدری لطیف اکبر کو 15 ووٹ حاصل ہوسکے

چوہدری لطیف اکبر مسلم لیگ ن اور پیپلز پارٹی کے متفقہ امیدوار تھے .وزارت عظمیٰ‌کیلئے ووٹنگ کا عمل دن دو بجے شروع ہوا ،جس میں‌اراکین نے اپنے ووٹ کے ذریعے امیدوار کے حق میں‌اپنی رائے کا اظہار کیا .قبل ازیں‌وزارت عظمیٰ‌کیلئے تحریک انصاف آزادکشمیر کے سربراہ بیرسٹرسلطان محمود چوہدری اور حلقہ وسطی باغ سے کامیاب ہونے والے امیدوار سردارتنویر الیاس نے بھی اپنے کاغذات نامزدگی داخل کروائے تھے تاہم ووٹنگ شروع ہونے سے قبل دونوں‌امیدوار عبدالقیوم خان نیاز ی کے حق میں‌دستبردار ہوگئے

آزادکشمیر قانون ساز اسمبلی کی نشستوں کی تعداد 53 ہے ،جن میں‌سے حالیہ انتخابات میں‌تحریک انصاف کو 32 نشستیں‌حاصل ہوئیں‌،جبکہ مسلم لیگ ن سات،پیپلز پارٹی کو 11 ،جموں‌کشمیر پیپلزپارٹی کو ایک ،نیشنل کانفرنس کو ایک نشست حاصل ہوئی تھی


یہ بھی پڑھیں


وزارت عظمیٰ‌کے انتخاب کے دوران چار اراکین غیرحاضر تھے .جبکہ چوہدری یاسین کی کوٹلی کی ایک نشست خالی ہونے کے باعث ایک ووٹ کم ہوا .

نومنتخب وزیر اعظم آزادکشمیر عبدالقیوم خان نیازی دوسال قبل پاکستان تحریک انصاف میں شمولیت کے موقع پر

واضح رہے کہ آزاد کشمیر قانون ساز اسمبلی کے حالیہ انتخابات کے دوران تحریک انصاف کی واضح کامیابی کے بعد گذشتہ کئی روز سے وزارت عظمیٰ‌کیلئے کئی امیدواروں‌کے انٹرویوز کاسلسلہ اسلام آباد میں‌جاری تھا ،اس دوڑ میں‌آزادکشمیر کی سیاست کے کئی نامی گرامی چہرے شامل تھے

تاہم وزیر اعظم عمران خان کی جانب سے عبدالقیوم نیازی کو نامزد کئے جانے کے بعد تمام افواہیں اور آراء‌ایک بار پھر دم توڑ گئیں‌،اور کئی حلقوں‌کیلئے یہ انتخابات حیرت انگیز بھی تھا کیوں‌کہ ابتدائی ناموں میں‌عبدالقیوم نیازی کا نام فہرست میں‌شامل نہیں‌تھا

جبکہ وزیر اعظم عمران خان کے انتخاب کا اعلان وفاقی وزیر اطلاعات فواد چوہدری نے ایک ٹوئٹ کے ذریعے کیا جس میں‌انہوں نے کہا
‘طویل مشاورت اور تجاویز کے جائزے کے بعد وزیر اعظم پاکستان و چیئرمین تحریک انصاف عمران خان نے نومنتخب ایم ایل اے جناب عبدالقیوم نیازی کو وزیر اعظم آزاد کشمیر کے عہدے کیلئے نامزد کیا ہے’۔

انہوں نے کہا’وہ ایک متحرک اور حقیقی سیاسی کارکن ہیں جن کا دل کارکنوں کے ساتھ دھڑکتا ہے

یاد رہے کہ دو سال قبل بیرسٹرسلطان محمود چوہدری نے عبدالقیوم نیازی کو پاکستان تحریک انصاف میں‌شامل کیا تھا .

Translate »