مظفرآباد
شفیق سید


آزادی کے نعرے لگانے اورسید علی گیلانی مرحوم کی میت کو پاکستانی پرچم میں لپیٹنے کے جرم میں بھارتی مقبوضہ کشمیر میں قابض انتظامیہ نے سیدعلی گیلانی کے اہل خانہ کے خلاف مقدمہ درج کرلیا ۔

میڈیا رپورٹس کیمطابق یہ مقدمہ بڈگام کے پولیس سٹیشن میں ہفتہ کی شام کو درج کیا گیا ۔واضح رہے کہ طویل عرصہ سے علیل پیرانہ سال سید علی گیلانی گذشتہ تقریباً 11 سال سے اپنی رہائش گاہ پر نظربندتھے ۔

92 سالہ سید علی گیلانی مقبوضہ کشمیر میں تحریک آزادی اور الحاق پاکستان کی سب سے مضبوط آوازتھی ،جنہیں 50 سال کے قریب بھارتی جیلوں کی سختیاں اور تشدد بھی ان کی راہ سے ہٹانے میں ناکام رہا

آخری سالوں میں انہیں ان کی رہائش گاہ پر مسلسل نظربند رکھا گیا جہاں بدھ کی رات کو ان کا انتقال ہوگیا
سید علی گیلانی کی وفات کی خبر عام ہوتے ہی پوری مقبوضہ وادی میں عملاً کرفیو نافذ کردیا گیا اور انٹرنیٹ اور موبائل فون سروس معطل کردی گئیں


یہ بھی پڑھیں


جبکہ بڑی تعداد میں قابض فوج نےان کی رہائش گاہ کے علاقے حیدر پورہ کو اپنے گھیرے میں لے لیا اور شہریوں کی نقل و حرکت پر پابندی لگا دی گئی

جبکہ اسی رات بھارتی پولیس اور سیکورٹی اہلکاروں کی بڑی تعداد حریت رہنما کی رہائش گاہ میں داخل ہوگئی اور اہلخانہ سے مرحوم کی میت زبردستی چھین کر لے گئے اور گھر میں موجود افراد کو تشدد کا نشانہ بناتے ہوئے مردوخواتین کو کمروں میں بند کردیا گیا اور بعدازاں رات کی تاریکی میں ہی ان کی رہائش گاہ کے قریب تدفین کردی گئی

واضح رہے کہ جس وقت بھارتی قابض انتظامیہ میت کو زبردستی چھیننے کی کوشش کررہی تھی کہ اس وقت ان کی میت پاکستان کے سبز ہلالی پرچم میں لپیٹی ہوئی تھی

دوسری جانب اس مرحوم سید علی گیلانی کی میت کی بے حرمتی اور اہلخانہ کے ساتھ بدسلوکی کے خلاف پاکستان نے شدید ردعمل کا اظہار کیا اور پاکستان میں بھارتی ہائی کمشنر کو دفتر خارجہ طلب کرکے اس واقعہ کے خلاف احتجاج ریکارڈ کروایا گیا

وزیراعظم عمران خان کی مذمت

دریں اثنا وزیر اعظم عمران خان نے سید علی گیلانی کی میت چھیننے اور ان کے اہلخانہ کےخلاف مقدمہ درج کرنے کے واقعہ کی شدید مذمت کی ہے
اپنے ایک ٹوئٹ میں وزیر اعظم عمران خان نے کہا
92 سالہ سید علی گیلانی جیسے بااصول اور باوقار رہنما کی میت چھیننا اور ان کے اہلخانہ کے خلاف مقدمہ درج کرنا بھارت میں نازی ازم سے متاثرہ بے جی پی حکومت کی ایک اور شرمناک مثال ہے
@ImranKhanPTI
Snatching the body of the 92 year old Syed Ali Geelani, one of the most respected & principled Kashmiri ldrs, & then registering cases against his family is just another shameful example of India’s descent into fascism under the Nazi-inspired RSS-BJP govt
Translate »