آزادی نیوز

خیبر پختونخوا میں  اگلے مہینے بورڈ امتحانات کے پیش پیر کے دن سے نویں سے 12ویں جماعت تک کے لیے ایس او پیز کے ساتھ تعلیمی ادارے کھولنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔

وزیر اعلی خیبر پختونخوا محمود خان کی زیر صدارت صوبائی ٹاسک فورس برائے انسداد کورونا کا اجلاس منعقد ہوا جس میں متعلقہ صوبائی وزرا کے علاوہ کور کمانڈر پشاور، چیف سیکریٹری، آئی جی اور دیگر اعلیٰ حکام نے شرکت کی۔

اجلاس کے دوران صوبہ بھر میں کورونا کی صورتحال کا تفصیلی جائزہ لیا گیا اور کورونا کے مثبت کیسز میں تیزی سے اضافے کی شرح پر تشویش ظاہر کی گئی۔

26کورونااموات،ایوب میڈیکل کمپلیکس کی تمام او پی ڈیز بند

پشاورمیں ایڈہاک ڈاکٹر ز کا مستقل ملازمتوں کیلئے احتجاج

پاکستان میں سوشل میڈیا تک رساٸی عارضی طور پر معطل

کورونا ایس او پیز اور دیگر احتیاطی تدابیر پر سختی سے عملدرآمد کو یقینی بنانے اور سرکاری دفاتر میں بھی عملے کی حاضری کو 50 فیصد سے بھی کم کرنے کا فیصلہ کیا گیا۔

دوران اجلاس بورڈ امتحانات کی تیاریوں کے سلسلے میں نویں سے 12 جماعت تک کے لیے اسکول 19 اپریل سے کھولنے کا فیصلہ کیا گیا ہے جس کا صوبائی وزارت تعلیم نے اعلامیہ جاری کردیا ہے۔

واضح رہے کہ کورونا وائرس کے پھیلاؤ کی وجہ سے 21 اضلاع میں اسکول بند کرنے کا فیصلہ کیا گیا تھا تاہم اب ان تمام اضلاع میں بورڈ امتحانات کی تیاریوں کے سلسلے میں نویں سے 12ویں جماعت کے لیے اسکول کھول دیے جائیں گے۔

ان اضلاع میں پشاور، نوشہرہ، چارسدہ، مردان، صوابی، کوہاٹ، سوات، ملاکنڈ، لوئر دیر، اپر دیر، بونیر، باجوڑ، خیبر، شانگلہ، ایبٹ آباد، ہری پور، اپر چترال، لوئر چترال، مانسہرہ، ڈیرہ اسماعیل خان اور بنوں شامل ہیں۔

اعلامیے کے مطابق کلاسز نصف بچوں کو ہفتے کے تین دن اسکول آنے کی اجازت ہو گی جبکہ بقیہ بچے اگلے تین دن اسکول آئیں گے۔

اس کے علاوہ پرائمری سے آٹھویں جماعت تک کے لیے اسکول بدستور 27 اپریل تک بند رہیں گے۔

اعلامیے میں کہا گیا کہ جن اضلاع اور علاقوں میں اسکولز کی بندش کا حکم نہیں دیا گیا تھا، وہ تمام طلبہ کے ساتھ پڑھائی کا عمل جاری رکھ سکتے ہیں۔

واضح رہے کہ وزیر تعلیم شفقت محمود نے کورونا وائرس کے پیش نظر 10 مارچ سے اسلام آباد سمیت ملک کے کچھ شہروں میں تعلیمی ادارے بند کرنے کا اعلان تھا اور وائرس کے پھیلاؤ کے پیش نطر صوبہ پنجاب اور خیبر پختونخوا کے اکثر اضلاع میں اسکول بند کر دیے گئے تھے۔

 

 

Translate »